سعودی وزیر داخلہ کی پاکستان آمد ،قیدیوں کی واپسی اہم ایجنڈا

سعودی وزیر داخلہ کی پاکستان آمد ،قیدیوں کی واپسی اہم ایجنڈا

سعودی وزیر داخلہ شہزادہ عبدالعزیز بن سعود بن النائف آج پاکستان پہنچ چکے ہیں۔وزرات داخلہ کی جانب سے پیر کو جاری ہونے والی پریس ریلیز میں بتایا گیا ہے کہ وزیر داخلہ شیخ رشید نے نور خان ایئر بیس پر سعودی ہم منصب اور ان کے وفد کا استقبال کیا۔ وزیر داخلہ کے ساتھ چھ رکنی اعلیٰ سعودی حکام کا وفد بھی پاکستان پہنچا ہے۔

شہزادہ عبدالعزیز بن سعود بن النائف پاکستان کے وزیر داخلہ شیخ رشید کی دعوت پر پاکستان آئے ہیں۔

وزیر داخلہ اس دورے کے دوران صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی اوروزیراعظم عمران خان سے بھی ملاقاتیں کریں گے۔سعودی وزیر داخلہ آج وزارت داخلہ کا دورہ کریں اور پاکستانی وزیر داخلہ شیخ رشید سے ملاقات بھی کریں گے۔ملاقات میں خطے کی صورت حال سمیت سعودی عرب میں قید پاکستانیوں کی رہائی اور دیگر اہم امور پر بات چیت ہو گی۔

اس سے قبل عرب نیوز نے شیخ رشید کے بیان کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا تھا کہ وزیرداخلہ کے ساتھ بات چیت کا بنیادی ایجنڈا سعودی عرب میں پاکستانی قیدیوں کی رہائی سے متعلق ہو گا۔ اتوار کو پریس کانفرنس کرتے ہوئے پاکستان کے وزیر داخلہ شیخ رشید نے کہا تھا کہ کل سعودی عرب کے وزیر داخلہ میری دعوت پر پاکستان پہنچ رہے ہیں۔

شیخ رشید نے امید ظاہر کی کہ سعودی وزیر داخلہ کا یہ دورہ پاکستان اور سعودی عرب میں پاکستانی قیدیوں کی واپسی کے حوالے سے خوش کن ہو گا۔

شیخ رشید نے مزید کہا کہ ہم مختلف ممالک کے وزرائے داخلہ کو دعوت دے رہے ہیں جہاں جہاں پاکستان کے قیدی موجود ہیں جو معمولی جرائم میں ملوث ہیں ان قید پاکستانیوں کو برادر اسلامی ممالک سے واپس لانے کی کوشش کی جا رہی ہے اور ایسا وزیراعظم کی ہدایت پر کیا جا رہا ہے۔

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ ہم اس معاملے کو کابینہ میں لے کر جا رہے ہیں کہ جو لوگ برادر اسلامی ممالک میں جرمانے ادا نہ کر سکنے کے باعث قید ہیں، ان کا جرمانہ ادا کر کے رہائی کا انتظام کرایا جائے۔اس سے پہلے پاکستان نے ترکی سے پہلے ہی بہت سے قیدیوں کو محفوظ طور پر رہا کروایا ہے۔انہوں نے قطر، بحرین اور کویت کے حکام کی جانب سے جلد پاکستان کا دورہ کرنے کے بارے میں بھی آگاہ کیا تھا۔

یوم یکجہتی کشمیر: دنیا بھر میں بھارتی مظالم کے خلاف خصوصی تقاریب

اپنا تبصرہ بھیجیں

nine + 6 =