تحریک انصاف کی رہنماء شریں مزاری کو ان کے گھر کے باہر سے اُٹھا لیا گیا۔

تحریک انصاف کی رہنماء شریں مزاری کو ان کے گھر کے باہر سے اُٹھا لیا گیا۔

مزید تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف کی رہنما اور سابق وفاقی وزیر شیریں مزاری کو اینٹی کرپشن کے اہلکاروں نے اسلام آباد میں واقع ان کے گھر کے باہر سے گرفتار کرلیا جہاں سے انہیں تھانہ کوہسار لایا گیا ہے۔

اس حوالے سے سابق وزیر اطلاعات چوہدری فواد چوہدری نے بھی ان کی گرفتاری کے حوالے سے ٹویٹ کیا ہے۔ پی ٹی آئی رہنما افتخار درانی  نے بھی ان کی گرفتاری کی تصدیق کی ہے۔ پی ٹی آئی رہنماؤں نے بتایا ہے کہ انہیں ان کے گھر کے باہر سے گرفتار کیا گیا جس کی مذمت کرتے ہیں۔

شیریں مزاری کو اینٹی کرپشن ونگ ڈی جی خان نے اراضی کے ایک مقدمے میں گرفتار کیا اور تھانہ کوہسار لے گیا جہاں سے انہیں لاہور لے جانے کا بھی امکان ہے۔ شیریں مزاری پر اس مقدمے میں ایف آئی آر درج ہے، عملہ وارنٹ گرفتاری لے کر آیا تھا۔ اینٹی کرپشن پنجاب نے ان کے خلاف کارروائی کا آغاز  مارچ 2022ء میں کیا تھا۔

فواد چوہدری نے مزید کہا کہ پارٹی کے مرکزی قائدین کچھ دیر میں تھانہ کوہسار پہنچیں گے۔ تمام کارکنان بھی تھانہ کوہسار پہنچ جائیں۔

پاکستان میں فیس بک اور واٹس ایپ کو جنسی حراسگی کا سب سے بڑا زریعہ قرار دے دیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں

5 × three =