موسے والا قتل کیس: دہلی پولیس نے ماسٹر مائنڈ کا سٔراغ لگا لیا۔

موسے والا قتل کیس: دہلی پولیس نے ماسٹر مائنڈ کا سٔراغ لگا لیا۔

29 مئی کو مانسہ میں موسے والا کے قتل کے بعد پریس کانفرنس کے کے دوران، پنجاب پولیس نے گلوکار کے قتل کے لیے بشنوئی اور کینیڈا میں مقیم گینگسٹر گولڈی برار کو ذمہ دار ٹھرایا تھا۔

دہلی پولیس نے بدھ کے روز گینگسٹر لارنس بشنوئی کو پنجابی گلوکار سدھو موے والا کے قتل کا ماسٹر مائنڈ قرار دیا۔

دہلی پولیس کے مطابق لارنس بشنوئی قتل کے پیچھے کا ماسٹر مائنڈ ہے…مہاراشٹرا پولیس کو ایک سدھیش ہیرامن کامبلے عرف مہاکال کا 14 روزہ پولیس حراستی ریمانڈ دیا گیا ہے۔ وہ شوٹرز میں سے ایک کا قریبی ساتھی ہے، لیکن وہ قتل میں ملوث نہیں ہے۔

دہلی پولیس نے لارنس بشنوئی کو 31 مئی کو تہاڑ کی جیل نمبر 8 سے ہتھیاروں کی اسمگلنگ کے ایک معاملے میں گرفتار کیا تھا۔ دہلی پولیس نے مکوکا ایکٹ کے تحت اس کے خلاف مقدمہ درج کیا،وہ گزشتہ ایک سال سے تہاڑ جیل میں بند ہے۔

بشنوئی سپر اسٹار سلمان خان اور ان کے والد سلیم خان کو دھمکی دینے والے خط پر بھی زیربحث ہے۔ پیر کو ممبئی کے بینڈ اسٹینڈ پرومینیڈ کے ایک بینچ پر پائے جانے والے اس نوٹ میں جہاں خان عام طور پر صبح کی سیر کے بعد بیٹھتے ہیں، اس میں لکھا تھا: “موسے والا جیسا کر دونگا (آپ کا وہی انجام ہوگا جو موے والا کا ہوا)۔”

سدھو موسے والا کی پوسٹ مارٹم رپورٹ نے کیا تہلکہ خیز انکشاف۔

اپنا تبصرہ بھیجیں

4 − four =