مفتاح اسماعیل نے 150 یونٹ سے کم بجلی استعمال کرنے والے دکانداروں کے لیے ٹیکس ریلیف کا اعلان کردیا۔

مفتاح اسماعیل نے 150 یونٹ سے کم بجلی استعمال کرنے والے دکانداروں کے لیے ٹیکس ریلیف کا اعلان کردیا۔

وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے اتوار کے روز ماہانہ 150 یونٹ سے کم بجلی استعمال کرنے والے دکانداروں کے لیے ٹیکس ریلیف کا اعلان کیا ہے۔

پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اسماعیل نے کہا کہ حکومت چھوٹے دکانداروں سے 36 ہزار روپے سالانہ ٹیکس مانگ رہی ہے اور اس بات پر زور دیا کہ سب کو ٹیکس ادا کرنا ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ صنعتکاروں کے ساتھ ساتھ بینکرز کو بھی ٹیکس ادا کرنا ہوگا۔

وزیر خزانہ نے کہا کہ اگلے سال سے ایک اور ٹیکس نافذ ہو جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ جو کمپنیاں اپنی پیداوار کا 10 فیصد برآمد نہیں کر سکیں ان پر دس فیصد ٹیکس عائد کیا جائے گا۔

وزیر خزانہ نے یہ بھی کہا کہ روپیہ، جو حالیہ ہفتوں میں امریکی ڈالر کے مقابلے میں تیزی سے گر رہا ہے، اگلے دو سے تین ہفتوں میں بہتر ہو جائیگا۔

انہوں نے کہا کہ رواں ماہ اور پچھلے مہینے حکومت کو اربوں کی ادائیگیاں کرنی پڑیں جس کی وجہ سے مقامی کرنسی دباؤ میں آگئی۔

پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ایک اور اضافہ ہوگا: مفتاح اسماعیل

اپنا تبصرہ بھیجیں

five + 2 =