پنجاب اسمبلی اور سپیکر ہاؤس کی تزئین و آرائش کے لیے 29 کروڑ روپے کے فنڈز جاری کر دیے گۓ۔

پنجاب اسمبلی اور سپیکر ہاؤس کی تزئین و آرائش کے لیے 290 ملین روپے کی فنڈنگ ​​دی گئی ہے۔

سرکاری اطلاعات کے مطابق روپے پنجاب اسمبلی کی نئی عمارت کے فرنیچر اور آرائش کے لیے بھی 69 ملین روپے مہیا کیے گئے ہیں۔

مزید برآں، پیپلز ہاؤس کی بحالی اور تعمیراتی کام کے لیے 100 ملین مختص کیے گئے ہیں۔

وزیر اعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الٰہی کی ہدایت پر محکمہ خزانہ پنجاب نے فوری طور پر فنڈز جاری کر دیئے۔

متعلقہ خبروں میں، صوبائی محکمہ خزانہ نے مالی پابندیوں کی وجہ سے لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی (ایل ڈی اے) کو کریم بلاک انڈر پاس کی تعمیر کے لیے نقد رقم جاری کرنے سے انکار کر دیا، ایل ڈی اے کو اس ہفتے کے شروع میں اپنے وسائل سے اس منصوبے کو مکمل کرنے کی ہدایت کی۔

صوبائی محکمہ خزانہ نے پہلے اس منصوبے کے لیے 10 ارب مختص کیے لیکن پھر اسے سالانہ بجٹ سے مشروط کرتے ہوئے واپس لے لیا۔

دریں اثنا، پنجاب حکومت نے اس ماہ کے شروع میں ریاستی سکول ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ (SED) کی فنڈنگ ​​بھی روک دی، جس سے معلمین اور متوفی اساتذہ کے اہل خانہ کے لیے معاملات پیچیدہ ہو گئے۔

رواں ماہ پنجاب اور کے پی کی اسمبلیاں تحلیل کر دیں گے، عمران خان

اپنا تبصرہ بھیجیں

eighteen + two =