نواز شریف کے وطن واپسی کے امکانات نئے یوکے کوویڈ ویرینٹ کے درمیان مزید کم ہو گئے ہیں۔

نواز شریف کے وطن واپسی کے امکانات نئے یوکے کوویڈ ویرینٹ کے درمیان مزید کم ہو گئے ہیں۔

ذرائع نے منگل کو رپورٹ کیا کہ جیسے ہی برطانیہ میں کووِڈ کا نیا ویرینٹ سامنے آیا، ڈاکٹروں نے مسلم لیگ (ن) کے سپریم لیڈر نواز شریف کو سفر کرنے سے خبردار کیا۔

سابق وزیراعظم عمران خان کی حکومت نے گزشتہ سال فروری میں نواز شریف کے پاسپورٹ کی معیاد ختم ہونے کے بعد اس کی تجدید سے انکار کر دیا تھا، لیکن اس وقت کے وزیر داخلہ شیخ رشید نے کہا تھا کہ اگر مسلم لیگ (ن) کے سپریم لیڈر وطن واپس آنا چاہتے ہیں تو انہیں خصوصی سرٹیفکیٹ جاری کیا جا سکتا ہے۔

تاہم، وزیر اعظم شہباز شریف کی قیادت میں موجودہ حکومت نے 25 اپریل کو مسلم لیگ (ن) کے رہنما کو نیا پاسپورٹ جاری کیا تھا۔

نواز کو نیا پاسپورٹ جاری ہونے کے بعد توقع تھی کہ وہ وطن واپس آجائیں گے۔

ذرائع کے مطابق ڈاکٹروں کی جانب سے نواز شریف کو علاج مکمل ہونے تک سفر سے گریز کرنے کی ہدایت کے بعد ان کی وطن واپسی کے امکانات ختم ہو گئے ہیں۔

جرمنی اور پرتگال سمیت بہت سے یورپی ممالک نے Omicron کی قسم BA5 کے کیسز میں تیزی سے اضافہ دیکھا گیا ہے۔

لندن میں نواز شریف کے دفتر پر مسلح افراد کا حملہ, لیگی کارکن حملے میں شدید زخمی ہو گئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں

five × one =