پیٹرول مہنگا ہونے پر وفاقی حکومت میں اختلافات، اہم وزراء کا احتجاج.

پیٹرول مہنگا ہونے پر وفاقی حکومت میں اختلافات، اہم وزراء کا احتجاج.

اسلام آباد : وزیراعظم شہباز شریف کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کے اجلاس میں وزراء نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتو ں میں اضافے پر احتجاج کیا۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم شہباز شریف کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا ، جس میں ملکی معاشی اور سیاسی صورتحال سمیت دیگر امور زیر غور آئے۔

ذرائع نے بتایا کہ کابینہ اجلاس میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتو ں میں اضافے پر وزرا نے احتجاج کیا ، وزراء نے مؤقف میں کہا کہ عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں کمی یہاں اضافہ ہو رہا ہے

وفاقی وزراء نے قیمتوں میں کمی کے ثمرات عوام تک منتقل کرنے کا مطالبہ کردیا ، اجلاس کے دوران وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل وزراکو مطمئن نہ کرسکے۔

گذشتہ روز حکومت نے بین الاقوامی منڈی میں پٹرولیم قیمتوں میں مسلسل کمی اور ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدر میں اضافے کے باوجود پٹرول کی قیمت میں 6 روپے 72 پیسہ اضافہ کردیا تھا۔

جس کے بعد پٹرول 233 روپے91 پیسے فی لٹر ہوگیا ، ہائی اسپیڈ ڈیزل میں صرف اکیاون پیسے فی لٹرکمی کی گئی ،جس کےبعد ڈیزل کی نئی قیمت 244 روپے44 پیسے ہوگئی۔

اسی طرح مٹی تیل ایک روپے سڑسٹھ پیسے کمی سے 199 روپے 40 پیسے فی لٹر اور لائٹ ڈیزل کی قیمت 43 پیسے اضافے کے بعد 191 روپے 75 پیسے فی لٹر ہوگئی ہے۔

پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ایک اور اضافہ ہوگا: مفتاح اسماعیل

اپنا تبصرہ بھیجیں

fifteen − 14 =