منی لانڈرنگ کیس: عدالت نے وزیراعظم اور وزیراعلیٰ پنجاب کی درخواست ضمانت پر فیصلہ محفوظ کرلیا.

منی لانڈرنگ کیس: عدالت نے وزیراعظم اور وزیراعلیٰ پنجاب کی درخواست ضمانت پر فیصلہ محفوظ کرلیا.

وزیر اعظم شہباز شریف اور وزیر اعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز کے خلاف منی لانڈرنگ کیس کی سماعت کرنے والی خصوصی عدالت نے ان کی درخواست ضمانت میں توسیع کر دی۔

وزیراعظم اور وزیراعلیٰ نے درخواست ضمانت میں توسیع کی درخواست دی اور خصوصی مرکزی عدالت کے جج نے پراسیکیوٹر اور ملزمان کے دلائل مکمل ہونے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا۔

بعد ازاں عدالت نے محفوظ کیا گیا فیصلہ سناتے ہوئے شہباز شریف اور حمزہ شہباز کو 10 لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکے جمع کرانے کی ہدایت کی جب کہ کیس کے شریک ملزمان کو 2 لاکھ روپے کے مچلکے جمع کرانے کی ہدایت کی گئی۔ عدالت نے انہیں سات روز میں مچلکے جمع کرانے کی ہدایت کی۔

آج کی سماعت سے پہلے، پچھلے کچھ دنوں کے دوران کیس میں متعدد پیشرفت ہوئی ہے۔ وزیر اعظم شہباز شریف کے خلاف منی لانڈرنگ کیس میں پراسیکیوٹر بینکنگ کورٹ میں سماعت کے دوران بے ہوش ہو گئے تھے۔

فاروق کو طبی امداد کے لیے سروسز ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔ تاہم وہ صحت یاب ہو چکے ہیں۔

مزید برآں شریف خاندان کے معروف خادم ملک مقصود جو کہ ’’مقصود چپراسی‘‘ کے نام سے مشہور ہیں جمعرات کو انتقال کرگئے۔ مقصود کو شہباز شریف اور ان کے خاندان کے خلاف منی لانڈرنگ کیس میں نامزد کیا گیا تھا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ مقصود ان دنوں بیرون ملک مقیم تھا۔ سابق مشیر احتساب شہزاد اکبر نے دعویٰ کیا تھا کہ مقصود کے بینک اکاؤنٹس میں لاکھوں کی بے حساب رقم پائی گئی۔

علاوہ ازیں 10 مئی کو شہباز شریف کے خلاف منی لانڈرنگ کیس کی تحقیقات کرنے والے ایف آئی اے کے سابق ڈائریکٹر ڈاکٹر رضوان دل کا دورہ پڑنے سے انتقال کر گئے تھے۔

مالی سال 2022-23 کے لیے 9۰5 کھرب روپے کا بجٹ پیش۔

اپنا تبصرہ بھیجیں

19 − 4 =